Home / اردو شاعری / خواب میں بھی دکھائی دیتا ہے غزل | حناء عنبرین

خواب میں بھی دکھائی دیتا ہے غزل | حناء عنبرین

غزل

خواب میں بھی دکھائی دیتا ہے 
کب وہ خود سے رہائی دیتا ہے

ذہن جس کی گواہی دیتا ہے 
دل اسی کی دہائی دیتا ہے

کچھ سمجھ میں مری نہیں آتا
نہ مجھے کچھ سجھائی دیتا ہے 


اب بہت بولنے لگا ہے وہ
اب وہ مجھ کو وہ سُنائی دیتا ہے

 

میں اُسے جوڑ جوڑ رکھتی ہوں
پیار سے جب کمائی دیتا ہے

وہ مرا ڈاکٹر ہے لفظوں سے
دردِ دل کی دوائی دیتا ہے


رُوٹھ جاتی ہوں, وہ مناتا ہے
پھر وہ اپنی صفائی دیتا ہے
۔
میرا سسرال مجھ سے ڈرتا ہے
اتنی عزت جو بھائی دیتا ہے

 

Check Also

غیر مسلم شعرا کرام دا نعتیہ کلام اور انہاں دے نام

غیر مسلم شعرا کرام دا نعتیہ کلام  نعت گوئی دا آغاز حضور اکرم صلی اللہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: معذرت سئیں نقل دی اجازت کائینی