Home / اردو شاعری / تو اگر کچھ نہیں کہے گا مجھے غزل | زہرا قرار

تو اگر کچھ نہیں کہے گا مجھے غزل | زہرا قرار

غزل

تو اگر کچھ نہیں کہے گا مجھے
میرا احساس مار دے گا مجھے

وہ جو مصروف ہے کتابوں میں
ایک دن بن پڑھے ،پڑھے گا مجھے

میں ترے پیار کی بھکارن ہوں
کوئی سکہ نہیں چلے گا مجھے

دل ترا بھر گیا محبت سے
اب بتا کس جگہ رکھے گا مجھے

وہ جو ہر بات بھول جاتا ہے
کس طرح یاد رکھ سکے گا مجھے

دیر سے گھر پلٹ کے آیا ہے
اب وہ بازار لے چلے گا مجھے

میں اگر اس کی بات میں آئی
صرف میرا ہے یوں لگے گا مجھے

زھریٰ قرار

Check Also

غیر مسلم شعرا کرام دا نعتیہ کلام اور انہاں دے نام

غیر مسلم شعرا کرام دا نعتیہ کلام  نعت گوئی دا آغاز حضور اکرم صلی اللہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: معذرت سئیں نقل دی اجازت کائینی