Home / اردو شاعری / گاؤں میں جب ایک بیوہ نے خود کشی کر لی | غزل

گاؤں میں جب ایک بیوہ نے خود کشی کر لی | غزل

غزل

گاؤں میں جب ایک بیوہ نے خود کشی کر لی
یوں لگا جیسے پوری دنیا نے خود کشی کر لی

تم اسے میری سرحد کا محافظ تو نہ کہو
اپنے گھر میں جسکی اہلیہ نے خود کشی کر لی


وہ کسی خیالوں میں چھت سے گر پڑی ہو گی
کیوں کہ رہے ہو مرحومہ نے خود کشی کر لی


جی۔۔۔! ” شہید” لیلیٰ ہے اور مجنوں "غازی” ہے
اس کہانی میں صرف لیلیٰ نے خود کشی کر لی


میں ذیشان ہوں جی مگر میں وہ نہیں ہوں
ارے آوارگی۔۔۔! تیرے آوارہ نےخود کشی کر لی
محمد ذیشان اقبال قیصرانی

Check Also

سرائیکی شاعر ذیش قیصرانی دا انٹر ویو محسن عباس نال

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔