Home / اردو شاعری / گاؤں میں جب ایک بیوہ نے خود کشی کر لی | غزل

گاؤں میں جب ایک بیوہ نے خود کشی کر لی | غزل

غزل

گاؤں میں جب ایک بیوہ نے خود کشی کر لی
یوں لگا جیسے پوری دنیا نے خود کشی کر لی

تم اسے میری سرحد کا محافظ تو نہ کہو
اپنے گھر میں جسکی اہلیہ نے خود کشی کر لی


وہ کسی خیالوں میں چھت سے گر پڑی ہو گی
کیوں کہ رہے ہو مرحومہ نے خود کشی کر لی


جی۔۔۔! ” شہید” لیلیٰ ہے اور مجنوں "غازی” ہے
اس کہانی میں صرف لیلیٰ نے خود کشی کر لی


میں ذیشان ہوں جی مگر میں وہ نہیں ہوں
ارے آوارگی۔۔۔! تیرے آوارہ نےخود کشی کر لی
محمد ذیشان اقبال قیصرانی

Check Also

غیر مسلم شعرا کرام دا نعتیہ کلام اور انہاں دے نام

غیر مسلم شعرا کرام دا نعتیہ کلام  نعت گوئی دا آغاز حضور اکرم صلی اللہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

error: معذرت سئیں نقل دی اجازت کائینی