Home / Uncategorized / مجھے اکثر وہ کہتی تھی محبت کچھ نہیں ہوتی.

مجھے اکثر وہ کہتی تھی محبت کچھ نہیں ہوتی.

مجھے اکثر وہ کہتی تھی محبت کچھ نہیں ہوتی.

مجھے اکثر وہ کہتی تھی محبت کچھ نہیں ہوتی.
مجھے اکثر وہ کہتی تھی محبت کچھ نہیں ہوتی.

حجر کا خوف بے مطلب وصل کے خواب بے معنی.

کوئی صورت نگاہوں میں کہاں دن رات رہتی.
یہ آنسو بے زباں آنسو بهلا کیا بول سکتے ہیں.

کہاں دل میں کسی کی یاد سے طوفان اٹھتے ہیں.
کہاں پلکوں کے سائے میں نمی دن رات رہتی ہے.

مجھے اب وہ نہیں کہتی محبت کچھ نہیں ہوتی.
کہ اب شاید محبت کی وہ سب رمزیں سمجھی ہے.

مجھے اکثر وہ کہتی تھی محبت کچھ نہیں ہوتی..
مگر اب وہ نہیں کہتی محبت کچھ نہیں ہوتی…

Check Also

بھوئیں تے پالے نہ پا سِیانی تھی,,

بھوئیں تے پالے نہ پا سِیانی تھی ۔۔۔ کُجھ تاں گالھی بَلا سِیانی تھی۔۔۔۔۔ بال …